نعیم بخاری کی یہ حالت کس نے بنائی؟ انہوں نےخود بتادیا

naeem-bukhari

لندن (پاک نیوز مانٹرنگ) تحریک انصاف کے رہنما اور عمران خان کے وکیل نعیم بخاری کی چار پسلیں ٹوٹ گئی ہیں اور ان کے چہرے پر بھی چوٹوں کے اتنے نشان ہیں‌کہ ان کو پہچاننا مشکل ہورہا تھا. ابھی تک ان چوٹوں کی وجہ سے کھانسنے میں تکلیف ہے۔ وہ کئی روز تک لندن کے ایک نجی ہسپتال میں‌زیرعلاج رہے ہیں، کسی نے ان پر تشدد کی خبر نشر کی تو کسی نے حادثہ قرار دیا. اب جا کر انہوں نے خاموشی توڑی ہے اور اپنی زبانی عوام کو حقائق سے آگاہ کیا ہے.

نعیم بخاری نے نجی ٹی وی سے گفتگو میں‌بتایاہے کہ وہ نمل یونیورسٹی کی چندہ مہم کےسلسلے میں لندن میں پہنچے تو اُن کے ساتھ زیر زمین اسٹیشن پر حادثہ پیش آیا جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوئے اور انہیں سینٹ میریز اسپتال منتقل کیا گیا تھا۔

سوشل میڈیا پر یہ افواہیں زیر گردش کر رہیں کہ نعیم بخاری کو پارک لین کے علاقے میں تشدد کا نشانہ بنایا گیا تاہم عزیز و اقارب نے ان افواہوں کی سختی سے تردید کی۔
عیم بخاری تیزی سے روبہ صحت ہیں اور اُن کی منگل کے روز اسپتال سے چھٹی ممکن ہے، صحت یابی کے بعد گفتگو کرتے ہوئے پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا کہ اسٹیشن پر موجود تھا کہ پھسلنے کی وجہ سے چوٹ لگی جس کے بعد اگلے دن اسپتال میں ہوش آیا، ڈاکٹرز نے بتایا کہ میری 4 پسلیاں ٹوٹی ہیں جس کی وجہ سے کھانسنے میں شدید تکلیف ہے علاوہ ازیں ایم آر آئی رپورٹ ٹھیک آئے ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ ہم نمل فاؤنڈیشن کے تحت ہونے والے فنڈ ریزنگ پروگرام میں شرکت کے لیے 28 اپریل کی رات لندن پہنچے اور میرے ساتھ واقعہ یکم مئی کو پیش آیا، برطانوی اخبار میں حادثے سے متعلق شائع ہونے والی خبر بے بنیاد ہے کیونکہ مجھے کسی نے دھکا نہیں دیا۔نعیم بخاری کا کہنا تھا کہ جس مقصد کے لیے لندن آیا زخمی ہونے کے بعد وہ کرنے کی ہمت تو نہیں تاہم جمعے کو تحریک انصاف کے تحت ہونے والی تقریب مٰں شرکت کروں گا، اگر صحت ٹھیک رہی تو دو چار روز میں چھٹی مل جائے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.