رانا ثناء کی خواتین سے متعلق نازیبا بیان پر معذرت، لفظ سوری بولنے سےانکار

لاہور(مانیٹرنگ سیل) پنجاب کے وزیر قانون رانا ثناءاللہ نے خواتین سے متعلق اپنے نازیبا بیان پر بالاخر ایوان میں معذرت کرلی ہے تاہم انہوں نے اپوزیشن کے مطالبے پر ’سوری‘ کا لفظ اداکرنے سے انکار کردیا۔تحریک انصاف کے جلسے پر ردعمل دیتے ہوئے رانا ثناءاللہ نے خواتین سے متعلق غیر مناسب الفاظ استعمال کیے تھے جس پر اپوزیشن جماعتوں کے شدید رد عمل پر مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے معذرت بھی کی تھی۔
پنجاب اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے رانا ثناءاللہ نے کہا کہ ’ہماری مائوں، بہنوں کے بارے میں تحریک انصاف کا سوشل میڈیا کیا کچھ نہیں کہتا، میں نے ایوان کے اندر معذرت کرلی ہے، اپوزیشن کہتی ہے سوری کہو، یہ نہیں ہوگا، سوری نہیں کہوں گا، سوری کا ایک لفظ بھی نہیں کہوں گا، اپوزیشن کا مطالبہ ٹھیک نہیں ہے‘۔انہوں نے کہا کہ سوری نہیں کرسکتا میں اپنا بیان واپس لیتا ہوں، سوری میں پانچ حروف ہیں، اس کا پہلا حرف ’س‘ بھی نہیں کہوں گا لہٰذا اب اس پر مزید بات کرنا مناسب نہیں۔
رانا ثناءاللہ کی بات پر اپوزیشن نے ایوان کا واک آئوٹ کردیا جب کہ اپوزیشن لیڈر میاں محمود الرشید نے کہا کہ رانا ثناءاللہ اپنا بیان واپس لے رہے ہیں، سوری بھی ایوان میں کریں، ہماری ماو¿ں بہنوں کے خلاف نازیبا الفاظ بولے گئے سوری بھی نہیں بول سکتے۔

You may also like...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: