ائر بلیو کا مالک حاضر ہو، چیف جسٹس نے شاہد خاقان عباسی کو طلب کر لیا

shahid khaqan

اسلام آباد (پاک نیوز ) چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثارنے 12مئی کو کراچی میں وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی سمیت تمام ایئرلائنز کے چیف ایگزیکٹوز کو طلب کرلیا۔ سپریم کورٹ میں ائرلائنزکےملازمین کی جعلی ڈگریوں کے معاملے پر سماعت ہوئی، دوران سماعت ڈائریکٹر سول ایوی ایشن نے بتایا کہ نجی ایئرلائن کے مالک شاہد خاقان عباسی ہیں جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ شاہد خاقان عباسی کو چیئرمین کی حیثیت سے بلالیتےہیں کراچی آجائیں،بطور وزیراعظم نہ آئیں۔
چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ کی ائر لائنز ملازمین کی جعلی ڈگریوں کے معاملے کی سماعت کی۔ عدالت نے 12 مئی کو تمام ایئر لائنز کے چیف ایگزیکٹوز کو کراچی رجسٹری میں پیش ہونے کا حکم دے دیا۔ چیف جسٹس نے پوچھا ائر بلیو کا مالک کون ہے، ڈائریکٹر سول ایوی ایشن نے بتایاائر بلیوکے مالک شاہد خاقان عباسی ہیں۔ چیف جسٹس نے کہاسمن کردیتے ہیں بطور چیرمین ائر بلیو کراچی آجائیں ، بطور وزیراعظم نہ آئیں ۔

عدالت نے کہاابھی تک ایئرلائنز کی جانب سے ان کے ملازمین کا مکمل ڈیٹا نہیں دیا گیا، ایئرلائنز کے چیف ایگزیکٹوز پیش ہوکر معاملے کی وضاحت کریں۔ وکیل سول ایوی ایشن اتھارٹی نے عدالت کو بتایا کہ پی آئی اے اور شاہین ایئرلائن کی جانب سے ڈیٹاآیاہے۔ ڈائریکٹر سول ایوی ایشن نے کہا 1972ملازمین کے ڈیٹا کی تصدیق کا کہا گیا تھا، 225ملازمین کا ڈیٹا آیا ،108کی تصدیق ہوچکی ہے ، 117ملازمین کی تصدیق باقی ہے، بہت سے ملازمین کی ڈگریاں جعلی ہیں،24 پائیلٹس کی ڈگری جعلی ثابت ہوئی۔

دوران سماعت چیف جسٹس نےوکیل حامد خان سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ حامد خان یہ بھی دیکھیں کتنے وکلاء کی ڈگریاں جعلی ہیں،وکلاء کی ڈگریوں کی تصدیق کرانی چاہیے یا نہیں؟ حامد خان نے کہا وکلاء کی ڈگریوں کی تصدیق کرانی چاہیے، بارز کو کہہ دیں وہ اس معاملے میں ڈیٹافراہم کردیں،کیس کی مزید سماعت 12 مئی کو کراچی رجسٹری میں ہوگی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.