karachi fight

کراچی پر قبضے کی جنگ، پی پی اور پی ٹی آئی کارکنوں میں‌تصادم، درجنوں زخمی

کراچی (پاک نیوز) گلشن اقبال میں جلسہ گاہ کے تنازع پر پیپلز پارٹی اور تحریک انصاف کے کارکنوں میں تصادم ہوا ہے جس کے دوران دونوں جانب سے پتھراؤ سمیت ہوائی فائرنگ بھی کی گئی جس کے باعث متعدد کارکنان زخمی ہوگئے۔ گلشن اقبال میں حکیم محمد سعید گراؤنڈ میں 12 مئی کو جلسہ کرنے کے لیے کیمپ لگانے کے معاملے پر پیپلز پارٹی اور تحریک انصاف کے کارکنوں کے درمیان تصادم ہوا ہے۔ تصادم کے درمیان دونوں جانب سے پتھراؤ ہوا، ڈنڈوں کا آزادانہ استعمال کیا گیا جب کہ ہوائی فائرنگ بھی ہوئی۔ شرپسندوں نے پارکنگ میں کھڑی موٹر سائیکلیں نذر آتش کردیں۔
جھگڑا کئی گھنٹے تک جاری رہا۔ جھگڑا شروع ہوتے ہی سب سے پہلے یہاں سے پولیس غائب ہوگئی اگر پولیس کوشش کرتی تو جھگڑا نہ بڑھتا، بعد میں بھی صرف چند اہلکار ہی نظر آئے یا جو پولیس بھی آئی وہ ایک طرف کھڑی تماشا دیکھتی رہی۔
تحریک انصاف کے ترجمان نعیم الحق نے کہا کہ ہم نے وہاں پہلے سے کیمپ لگایا ہوا تھا، پی پی کی سندھ میں حکومت ہے اس لیے انہوں نے اپنے ڈپٹی کمشنر کے ذریعے یہاں جلسے کا اجازت نامہ حاصل کرلیا جس کی ہم سخت مذمت کرتے ہیں، اگر یہ معاملہ حل نہ ہوا تو مزید حالات خراب ہوں گے تاہم لڑائی جھگڑے کے حق میں نہیں ہوں۔
پیپلز پارٹی کراچی کے صدر سعید غنی کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی ایم کیو ایم بننے کی کوشش کر رہی ہے. اسےجلسے کی اجازت نہیں‌ملی ، یہ کہیں‌اور جلسہ کرلیں، جھگڑا بلا جواز ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.