easy load

موبائل فون کمپنیوں کی بدمعاشی، چیف جسٹس نے موبائل لوڈ پر کٹوتیوں کا ازخود نوٹس لے لیا

اسلام آباد (پاک نیوز) چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے تمام تر عوامی مسائل حل کرانے کا بیڑہ اٹھا رکھا ہے. آج انہوں نے موبائل فون کارڈز پر ٹیکس کٹوتی کا از خود نوٹس بھی لے لیا۔
چیف جسٹس نے موبائل فون کمپنیوں کی جانب سے کارڈ چارجنگ پر ہونے والی کٹوتیوں کا از خود نوٹس لے لیا۔ چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ بتایا جائے موبائل فون کارڈ پر کون کون سے ٹیکس لاگو ہوتے ہیں، 100 روپے کا کارڈ چارج کرنے پر تقریبا 40 روپے کاٹ لئے جاتے ہیں، یہ کٹوتیاں کس قانون کے تحت کی جاتی ہیں۔ سپریم کورٹ نے اٹارنی جنرل سے رپورٹ طلب کرتے ہوئے آئندہ منگل کو کیس سماعت کیلئے مقرر کرنے کا حکم دے دیا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل سینٹ قائمہ کمیٹی آئی ٹی نے بھی موبائل کمپنیوں کے کارڈ پر ٹیکس وصولی کے طریقہ کار پر شدید تشویش کا اظہار کیا تھا۔ کمیٹی ارکان کمیٹی نے ایک سو روپے کے موبائل کارڈ پر 40 روپے سے زائد ٹیکس کٹوتی پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ غریب عوام اور نان فائلر صارفین کی سہولت کیلئے دوسرا طریقہ کار اپنایا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں